بانیان پاکستان کی اولادیں پاکستان کی محافظ ہیں وہ پاکستان کے خلاف کیسے ہوسکتی ہیں۔ ڈاکٹرندیم احسان

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے کنوینر ڈاکٹرندیم احسان نے کہا ہے کہ جو لوگ بانیان پاکستان کی اولادیں ہیں اور پاکستان کی محافظ ہوں وہ پاکستان کے خلاف کیسے ہوسکتی ہیں۔ پاکستان کے دشمن وہ عناصر ہیں جوبانیان پاکستان اوران کی اولادوں کو دیوارسے لگارہے ہیں۔ انہوں نے یہ بات ایم کیوایم یوکے ویسٹ لندن یونٹ کے کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس سے ایم کیوایم یوکے کے سینٹرل آرگنائزرہاشم اعظم، جوائنٹ سینٹرل آرگنائزر محسن سعید اور ویسٹ لندن کے یونٹ انچارج محبوب الٰہی نے بھی خطاب کیا۔ کنوینر ڈاکٹرندیم احسان نے اپنے خطاب میں کہا کہ بانی و قائد تحریک الطاف حسین پاکستان کے نہیں بلکہ پاکستان پر مسلط فرسودہ نظام کے خلاف ہیں،وہ پاکستان کو لوٹنے اور اس پر قبضہ کرنے والے ٹولے کے خلاف ہیں، انہوں نے اسی مقصد سے تحریک قائم کی اور غریب ومتوسط طبقہ کے نوجوانوں کو ایوانوں میں بھیج کرملک کے جاگیردارانہ نظام کو چیلنج کیا، یہی وجہ ہے کہ ملک کی اسٹیبلشمنٹ ان کے خلاف ہوگئی کیونکہ وہ جاگیردارانہ نظام کی سب سے بڑی محافظ ہے ، اسٹیبلشمنٹ نے قائد تحریک الطاف حسین کو راستے سے ہٹانے کے لئے مائنس الطاف کی پالیسی پر عمل کیا اور آج تک کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین کو سیاست سے مائنس کرنے کا مطلب پاکستان کو مائنس کرنا ہے ۔ڈاکٹرندیم احسان نے کہا کہ ریاستی مظالم اور اپنے کارکنوں کی سفاکانہ شہادت کے باعث پاکستان مردہ باد کہنے پر قائد تحریک الطاف حسین کو غدار قرار دیدیا گیا اور ایم کیوایم کے خلاف فوج کشی کردی گئی اور نائن زیرو اور تمام دفاتر کو سیل کردیا گیا لیکن فوج کے وہ جرنیل جنہوں نے پاکستان کو دولخت کردیا ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ ڈاکٹر ندیم احسان نے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین اس فرسودہ نظام اور اس ذہنیت سے لڑرہے ہیں جو کھیل کو جہاد اور جہاد کو کھیل سمجھتے ہیں، جن کی نظر میں ہروہ شخص غدار اور ملک دشمن ہے جوان کی غلط پالیسیوں پر تنقید کرتے ہیں اور ان سے بغاوت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کئی برسوں سے قائد تحریک الطاف حسین کو راستے سے ہٹانے کے لئے پوری طاقت اور تمام وسائل بروئے کار لارہی ہے، اب عمران خان کی مہاجردشمن حکومت کے برسراقتدارآنے کے بعد جھوٹی اورخودساختہ رپورٹوں اور جھوٹے مقدمات کی بنیادپر لندن سے بھی قائد تحریک الطاف حسین کو بے دخل کرانے کی سرتوڑ کوششیں کررہی ہے لیکن وہ اپنے مکروہ عزائم میں کامیاب نہیں ہوگی کیونکہ یہاں ظلم کی نہیں قانون کی حکمرانی ہے ۔
ڈاکٹر ندیم احسان نے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین کی 65 ویں سالگرہ کے سلسلے میں اتوار7 اکتوبر کو لندن میں شانداراجتماع ہوگا جس سے قائد تحریک الطاف حسین تاریخی خطاب کریں گے،، تمام کارکنان اس اجتماع کو کامیاب بنانے کے لئے محنت سے کام کریں ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایم کیوایم یوکے کے سینٹرل آرگنائزرہاشم اعظم نے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین صرف مہاجروں کے ہی قائد نہیں بلکہ وہ تمام مظلوموں کے رہبرہیں، اس وقت بھی اگرمہاجروں کے ساتھ ساتھ بلوچوں، پشتونوں،سندھیوں، سرائیکیوں، ہزارے وال ، مذہبی اقلیتوں سمیت تمام مظلوموں کے لئے اگرکوئی لیڈر آواز اٹھارہا ہے تو وہ صرف اور صرف قائد تحریک الطاف حسین ہیں، انہوں نے اپنی اس جدوجہد میں کسی بھی موڑپر عوام کے حقوق پرکوئی سمجھوتہ نہیں کیا اور یہی قائد تحریک الطاف حسین کا سب سے بڑا جرم ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم یوکے کارکنان حق کی اس جدوجہد میں قائد تحریک الطاف حسین کی قیادت میں متحد ہیں اور وہ تمام تر نامساعد حالات کے باوجود قائد تحریک الطاف حسین کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے ۔ انہوں نے یوکے یونٹ کے کارکنوں پر زوردیا کہ وہ 7 اکتوبر کے اجتماع میں شرکت کے لئے تمام قومیتوں کے لوگوں کو دعوت دیں۔