روزنامہ امن کراچی کے خلاف مقدمہ صحافتی آزادی کے صریحاً خلاف ورز ی ہے۔ ڈاکٹرندیم احسان

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے کنوینر ڈاکٹرندیم احسان نے روزنامہ امن کراچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی شدید مذمت کی ہے اور اسے صحافتی آزادی کے صریحاً خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ اپنے ایک بیان میں ڈاکٹرندیم احسان نے کہا کہ روزنامہ امن کراچی اور اس کے مدیر کے خلاف محض اس بنیاد پر مقدمہ درج کیا گیا ہے کہ روزنامہ امن نے قائد تحریک الطاف حسین کا بیان شائع کیا ہے اور اس کے لئے لاہور ہائیکورٹ کے حکم کا حوالہ دیا گیا ہے ۔ ڈاکٹر ندیم احسان نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ کی جانب سے یہ حکم بھی محض چھ ماہ کے لئے تھا جسے اب دو سال سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے لیکن روزنامہ امن کو انتقام کا نشانہ بنایا جارہاہے اور اس طرح آزادی صحافت کا گلا گھونٹا جارہا ہے ۔ ڈاکٹر ندیم احسان نے کہا کہ یہ انتہائی شرمناک امر ہے کہ سیاستدانوں، ججوں، صحافیوں اور دیگر مخالفین کو کھلی کھلی گالیاں دینے والوں کو تو ہر طرح کی آزادی ہے لیکن مہاجروں کے لئے حقوق کا مطالبہ کرنے والے قائد تحریک الطاف حسین پر میڈیا پر پابندی عائد ہے جوآئین کے تحت بنیادی حقوق کے سراسر خلاف ہے ۔ ڈاکٹرندیم احسان نے مطالبہ کیا کہ روزنامہ امن کے خلاف مقدمہ ختم کیا جائے اور میڈیا پر قدغن لگانے کا سلسلہ بند کیا جائے۔