ساہیوال میں پولیس کی فائرنگ سے چار افراد کی ہلاکت کے واقعہ کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کرائی جائے ، قائد تحریک الطاف حسین

متحدہ قومی موومنٹ کے بانی وقائد جناب الطاف حسین نے صوبہ پنجاب کے شہر ساہیوال میں ایک کار پر پولیس اہلکاروں کی بلاجواز فائرنگ کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور فائرنگ کے نتیجے میں چار افراد کے بہیمانہ قتل پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ ایک بیان میں جناب الطاف حسین نے کہا کہ پنجاب میں امن وامان کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے، دہشت گردوں اور سفاک پولیس اہلکاروں کی قتل وغارتگری روزمرہ کا معمول ہیں ۔جناب الطاف حسین نے کہا کہ اطلاعات کے مطابق آج ساہیوال میں ایک خاندان شادی کی تقریب میں شرکت کیلئے جارہا تھا کہ سفاک پولیس اہلکاروں نے بلاجواز فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں میاں بیوی، ان کی بیٹی سمیت چار افراد جاں بحق ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ اس المناک واقعہ پر حکومتی وزراء کی جانب سے میڈیاپر دیئے جانے والے بیانات سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ وفاقی اور پنجاب کی صوبائی حکومت سفاک قاتل پولیس اہلکاروں کو تحفظ دینے کی کوشش کررہے ہیں جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ جناب الطاف حسین نے مطالبہ کیا کہ ساہیوال میں پیش آنے والے المناک واقعہ کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کرائی جائے ، تحقیقات سے عوام کو آگاہ کیا جائے اور اس واقعہ کے ذمہ داروں کو آئین اورقانون کے تحت سخت ترین سزا دی جائے۔ جناب الطاف حسین نے جاں بحق ہونے والے افراد کے سوگوارلواحقین سے دلی تعزیت وہمدردی کا اظہار کیا اور زخمی بچوں کی صحت یابی کیلئے دعا بھی کی ۔