پاکستان میں اپنے حقوق مانگنا سب سے بڑا جرم ہے ،قاسم علی رضا

ایم کیوایم کے ڈپٹی کنوینر قاسم علی رضا نے کہا ہے کہ پاکستان میں حقوق مانگنا سب سے بڑا جرم ہے ، ہمیں بھی اسی جرم کی پاداش میں ریاستی مظالم کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار ایم کیوایم یوکے سلاؤ چیپٹر کے زیر اہتمام دعوت افطار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب میں کارکنوں اور ہمدرد نوجوانوں، بزرگوں، خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔قاسم علی رضا نے کہا کہ قائد تحریک الطاف حسین نے اپنے کارکنوں کے بہیمانہ ماورائے عدالت قتل، ان کی مسخ شدہ لاشیں اور لاپتہ کارکنوں کی ماؤں بہنوں کی گریہ وزاری اور ریاستی مظالم کے باعث شدت جذبات میں پاکستان مردہ باد کہہ دیا تو اس کو بنیاد بنا کر ہم پر فوج کشی کردی گئی اور غداری کے الزامات لگادیے گئے لیکن دیگر سیاسی رہنماؤں نے اسی طرح کی بات کی لیکن کسی کو غدار نہیں کہاگیا۔ سابق آئی ایس آئی چیف جنرل اسد درانی نے را کے سابق چیف کے ساتھ ملکر کتاب لکھی ،اس کتاب میں بھی وہ اعتراف کرتے ہیں کہ انکے بیٹے کو انڈیا میں حراست میں لیا گیا تواسد درانی نے را کے چیف سے رابطہ کیا جس پر ان کی رہائی ممکن ہوئی۔ لیکن اس بات پر انہیں کسی نے غدارنہیں کہا۔ قاسم علی رضا نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ نہیں چاہتی کہ پاکستان کے غریب و مظلوم عوام متحد ہوکر اپنے غصب شدہ حقوق حاصل کریں۔ رابطہ کمیٹی کے رکن منظور احمد نے اپنے خطاب میں کہا کہ ایم کیوایم پاکستان کی واحد جماعت ہے جو تمام مذاہب اور مسالک کا احترام کرتی ہے اور چاہتی ہے کہ پاکستان کو ایسا ملک بنایا جائے جہاں مذہب، مسلک اور عقیدے کی بنیاد پر لوگوں کو قتل نہ کیا جائے اور سب کو آزادی ہو،اسی لئے اسٹیبلشمنٹ کے وہ عناصر جو مذہبی انتہاپسندوں کو بنانے اور ان کی سرپرستی کرنے والے ہیں وہ ایم کیوایم کو ختم کردینا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایسے ہی عناصر نے پاکستان کو دو لخت کیا اور اب وہ باقی ماندہ پاکستان کو بھی اپنی نفرت اور تعصب کی بھینٹ چڑھا رہے ہیں۔ ایم کیوایم یوکے کے آرگنائزر ہاشم اعظم نے اپنے خطاب میں کہا کہ ایم کیوایم ایک گلدستہ ہے جس میں تمام قوموں کے پھول شامل ہیں۔ قائد تحریک الطاف حسین ملک کے تمام مظلوموں کے لئے ان کے حقوق اور باعزت زندگی کا حصول چاہتے ہیں، یہ ہماری جدجہد ہے اور ہم یہ جدوجہد تمام تر مظالم اور سازشوں کے باوجود جاری رکھیں گے۔ اس موقع پر ایم کیوایم یوکے کے جوائنٹ آرگنائزر سہیل خانزادہ ، آرگنائزنگ کمیٹی کے ارکان محمد راشد، محسن سعید، فیصل خانزادہ اور فاروق مرتضیٰ نے بھی خطاب کیا جبکہ شعبہ خواتین کی کارکن محترمہ معروف مرتضٰی نے نعت پیش کی۔