پاکستان میں مہاجروں کے خلاف انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورذیاں کی جارہی ہیں۔ ہاشم اعظم

ایم کیوایم یوکے کے آرگنائزر ہاشم اعظم نے کہا ہے کہ پاکستان میں مہاجروں کے خلاف انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورذیاں کی جارہی ہیں، ملک میں عدلیہ، میڈیا، تمام ادارے اسٹیبلشمنٹ کے کنٹرول میں ہیں ، اسلئے ہم اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ ان انسانی حقوق کی خلاف ورذیوں کا نوٹس لیں۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار ایم کیوایم یوکے ساؤتھ لندن چیپٹر کے زیراہتمام ٹوٹنگ کے علاقے میں منعقدہ افطار پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب میں کارکنوں اور ہمدرد نوجوانوں، بزرگوں ، خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ہاشم اعظم نے کہا کہ پاکستان میں کالعدم تنظیموں کو تو سیاسی سرگرمیوں، انتخابات میں حصہ لینے ، جلسے جلوس کرنے ، چندہ جمع کرنے اور ہر طرح کی سرگرمیوں کی آزادی ہے لیکن ایم کیوایم جو ایک قانون پسند جماعت ہے ، جو 1987ء سے انتخابات میں حصہ لیتی آئی ہے اور جسے کروڑوں عوام کی حمایت حاصل ہے ، اس پر پابندی عائد ہے،ایم کیوایم کا مرکز نائن زیرو سیل ہے، قائد تحریک الطاف حسین کی تقریر اور اظہار رائے پر پابندی ہے، ہمارے کارکنوں کو ماورائے عدالت قتل کیا جارہا ہے، انہیں گرفتار کر کے لاپتہ کیا جارہا ہے، ہم پر ہمارے ہی شہر کی زمین تنگ کردی گئی ہے ، یہ وجہ ہے کہ ہم نے الیکشن کا بائیکاٹ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم عوام سے کہتے ہیں کہ وہ 25 جولائی کو الیکشن کا بھر پور بائیکاٹ کریں اور گھروں میں رہ کر اپنا احتجاج ریکارڈ کرائیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس ریاستی جبروستم سے گھبرانے والے نہیں ہیں اور اپنی قوم کے حقوق کے حصول کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے، ہمیں یقین ہے کہ انشاء اللہ فتح حق اورسچ کی ہوگی۔ الیکشن ہماری منزل نہیں، ہم مہاجروں کے غصب شدہ حقوق کا حصول چاہتے ہیں، ہم 25 جولائی کو الیکشن کا بائیکاٹ کر کے قائد تحریک الطاف حسین کے فکروفلسفہ کے مطابق اپنی منزل کی جانب بڑھیں گے۔ اس موقع پرایم کیوایم یوکے کے جوائنٹ آرگنائرز سہیل خانزادہ، سینٹرل آرگنائزنگ کمیٹی کے ارکان محسن سعید، فیصل خانزادہ اور ایم کیوایم ساؤتھ لندن یونٹ کے انچارج رضوان الدین نے بھی خطاب کیا۔ یونٹ کمیٹی کے رکن رضا جعفری نے نظامت کی جبکہ محمد راشد نے تلاوت کی ۔