پاکستان کوارٹرز کے مکینوں کو گھروں سے بیدخل کرنے کی کوشش کراچی میں مہاجروں کو اقلیت میں بدلنے کی سازش کا حصہ ہے۔ الطاف حسین

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد جناب الطاف حسین نے کراچی میں پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرز اور کلیٹن کوارٹرز کے مکینوں کو ان کے گھروں سے بیدخل کرنے کیلئے پولیس کی جانب سے کئے جانے والے ظالمانہ ایکشن کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔ اپنے ایک بیان میں جناب الطاف حسین نے کہا کہ پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرز اور کلیٹن کوارٹرز میں برسوں سے آباد یہ تمام مکین مہاجرہیں جنہوں نے سول سروس میں برسوں تک پاکستان کی خدمت کی ، وہ باقاعدگی سے ان کوارٹرز کا کرایہ حکومت کو ادا کرتے آئے ہیں،وہ کوارٹرز کی اصل قیمت سے زیادہ کرایہ حکومت کو ادا کرچکے ہیں، ایم کیوایم کی کوششوں سے کئی برس قبل ہی حکومت کی جانب سے یہ اعلان ہوچکا ہے کہ پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرز اور کلیٹن کوارٹرز کے مکینوں کو مالکانہ حقوق دیے جائیں گے لیکن اسمبلیوں اور حکومت کے فیصلوں اور اعلانات کے باوجود ان مکینوں کو مالکانہ حقوق نہیں دیے جارہے ہیں بلکہ اب سپریم کورٹ کے ذریعے ان کو ان کے بسے بسائے گھروں سے جبراً بیدخل کیا جارہا ہے ،آج بھی ان مظلوموں کو ان کے گھروں سے بیدخل کرنے کیلئے جس طرح ریاستی طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا گیا، ان مہاجر نوجوانوں، بزرگوں حتیٰ کہ ماؤں، بہنوں اور بچوں پر جس بیدردی سے لاٹھیاں برسائی گئیں، فائرنگ کی گئی، شیلنگ کی گئی اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ جناب الطاف حسین نے کہا کہ پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرز اور کلیٹن کوارٹرز کے مکینوں کو ان کے گھروں سے اسلئے جبری بے دخل کیا جارہا ہے کیونکہ وہ مہاجر ہیں، یہ سب فوج، رینجرز،آئی ایس آئی اور اسٹیبلشمنٹ کی اسی سازش کا حصہ ہے جس کے تحت قیام پاکستان کے بعد سے ہی مہاجروں کو ظلم و نا انصافیوں کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور ان کے ساتھ دوسرے درجے کے شہریوں جیسا سلوک کیا جارہا ہے،اسی سازش کے تحت مہاجروں کی واحد نمائندہ جماعت ایم کیوایم کو تقسیم کیا، ریاستی آپریشن اورطاقت کے ذریعے اس کے تنظیمی ڈھانچے کو توڑا اور اب اسٹیبلشمنٹ کراچی میں مہاجروں کو اقلیت میں بدلنے کی سازش پر عمل پیرا ہے جس کے تحت پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرز اور کلیٹن کوارٹرز کے ہزاروں مہاجر خاندانوں کو ان کے گھروں سے بیدخل کرکے ان کوارٹرز کو اسٹیبلشمنٹ کی من پسند طاقتور بلڈرز مافیا کے حوالے کیا جائے گا ۔جناب الطاف حسین نے کہا کہ ایک طرف تو تحریک انصاف کی نام نہاد حکومت 50 لاکھ گھر بنانے کے کھوکھلے اعلان کررہی ہے جبکہ دوسری طرف مہاجروں کو ان کے بسے بسائے گھروں سے بیدخل کیا جارہا ہے جو اس نام نہاد حکومت کی مہاجردشمنی کا ایک کھلا ثبوت ہے ۔ جناب الطاف حسین نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس ثاقب نثار سے اپیل کی کہ پاکستان کوارٹرز، مارٹن کوارٹرزاور کلیٹن کوارٹرز کے مکینوں کو ان کے گھروں سے بے دخل کرنے کا عمل بند کرایا جائے اور انہیں جلد از جلد مالکانہ حقوق دیے جائیں۔ جناب الطاف حسین نے پولیس کے تشدد کا نشانہ بننے والے پاکستان کوارٹرزکے مظلوم مکینوں سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا اور ان سے کہا کہ وہ اسی طرح متحد رہیں اور قوم کے ان غداروں کا بائیکاٹ کریں جن کی ضمیرفروشی کی وجہ سے تحریک کمزور ہوئی ۔