پاکستان کو قائد اعظم کے بجائے طالبان کے نظریہ کے مطابق چلایا جارہا ہے ، ایم کیوایم برطانیہ

متحدہ قومی موومنٹ برطانیہ کے آرگنائز ہاشم اعظم نے کہا ہے کہ پاکستان کو قائد اعظم محمد علی جناح ؒ کے نظریہ کے بجائے طالبان کے نظریہ کے مطابق چلایا جارہا ہے ۔ یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ایم کیوایم برمنگھم یونٹ کے ذمہ داران اور کارکنان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ ہاشم اعظم نے کہا کہ جس شخص نے آرمی پبلک اسکول پشاورکے معصوم بچوں سمیت ہزاروں پاکستانیوں کے سفاکانہ قتل کی ذمہ داری قبول کی آج اسے میڈیا پر ہیرو بنا کر پیش کیا جارہا ہے اورقائد تحریک جناب الطاف حسین کے خطاب پر پابندی عائد کردی گئی ہے اور قائد تحریک سے وابستگی کی بنیاد پروفیسرحسن ظفرعارف جیسی اعلیٰ تعلیم یافتہ شخصیت کو ہتھکڑیاں پہنائی جارہی ہیں۔ اجلاس سے جوائنٹ آرگنائزر سہیل زیدی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ، برصغیرکے مسلم اقلیتی صوبوں کے مسلمانوں کی قربانیوں کا ثمر ہے لیکن آج بانیان پاکستان کی اولاد مہاجروں پرپاکستان کی زمین تنگ کردی گئی ہے اورمہاجروں کے انسانی حقوق بری طرح پامال کیے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ تمام ترریاستی مظالم کے باوجود مہاجرقوم ، بابائے مہاجرقوم کی قیادت میں حقوق کی جدوجہد کرتی رہے گی ۔ بعدازاں ایم کیوایم برمنگھم یونٹ کی تنظیم نو کی گئی اور برمنگھم یونٹ کے انچارج کی ذمہ داری اشرف بیگ کو تفویض کی گئی۔

علاوہ ازیں ایم کیوایم مانچسٹریونٹ کے تحت سانحہ لندن کے متاثرین کی یاد میں شمع روشن کی گئیں اورمتاثرہ خاندانوں سے دلی ہمدردی کا اظہارکیا گیا۔ اس موقع پر ایم کیوایم برطانیہ کے آرگنائز ر ہاشم اعظم ، آرگنائزنگ کمیٹی کے اراکین عبدالستار، ساجد علی اور مانچسٹریونٹ کے انچارج محمد حفیظ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مذہبی انتہاء پسندی اورفرقہ واریت ، قومی سلامتی وبقاء کیلئے سنگین خطرہ ہے اور قائد تحریک جناب الطاف حسین شروع دن سے ہی مذہبی رواداری اورفرقہ وارانہ ہم آہنگی کے فروغ کیلئے عملی جدوجہد کررہے ہیں ۔