کے الیکٹرک کی جانب سے کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کیلئے گیس کی عدم فراہمی کا جواز کھوکھلا ہے ۔رابطہ کمیٹی متحدہ قومی موومنٹ

متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے کہا ہے کہ کراچی میں بجلی کی بڑھتی ہوئی لوڈشیڈنگ پر صوبائی حکومت کی بے حسی قابل مذمت ہے ۔ اپنے ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا کہ گرمی کی شدت بڑھتے ہی ایک بارپھر کے الیکٹرک نے بجلی کی لوڈشیڈنگ شروع کر دی ہے اوراس کے لئے گیس کی فراہمی میں کمی کو جواز بنایا جارہا ہے ۔رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کراچی کے مستقل شہری تو کے الیکٹرک بھاری بھاری بل بھی ادا کر رہے ہیں جبکہ کراچی میں قائم غیر قانونی آبادیوں میں استعمال ہونے والی بجلی کی کوئی روک تھام نہیں ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کراچی ملک کو 70 فیصد اور صوبہ سندھ  کو 90 فیصد ریونیو دیتا ہے لیکن کراچی کو اس کی ضرورت کے مطابق بجلی تک فراہم نہیں کی جارہی ہے ا ور حکومت سندھ لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کے لئے کوئی کردار ادا نہیں کررہی ہے ۔ حکومت سندھ  کی یہ بے حسی اس کی کراچی دشمن پالیسی اور ذہنیت کی مظہر ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا کہ کراچی میں لوڈشیڈنگ پر قابو پانے کے لئے فوری مداخلت کی جائے اور کراچی کے شہریوں کو لوڈشیڈنگ کے عذاب سے نجات دلائی جائے ۔